حضرت عبداللہ بن سلام فرماتے ہیں حضرت عثمان اپنے گھر میں محصور تھے، میں سلام کرنے کیلئے حضرت عثمان کی خدمت میں اندر گیا تو آپ نے فرمایا خوش آمدید ہو میرے بھائی کو۔۔۔۔


حضرت عبداللہ بن سلامؓ فرماتے ہیں حضرت عثمانؓ اپنے گھر میں محصور تھے میں سلام کرنے کے لیے حضرت عثمانؓ کی خدمت میں اندر گیا تو آپؓ نے فرمایا خوش آمدید ہو میرے بھائی کو، میں نے آج رات اس کھڑکی میں حضورؐ کو دیکھا(حالت خواب میں)۔ آپؐ نے فرمایا اے عثمان! ان لوگوں نے تمہارا محاصرہ کر رکھا ہے؟ میں نے کہا جی ہاں پھر فرمایا انہوں نے تمہیں پیاسا رکھا ہوا ہے؟ میں نے کہا جی ہاں پھر حضورؐ نے پانی کاایک ڈول لٹکایا جس میں سے میں نے خوب سیر ہو کرپانی پیا اور اب بھی میںاس

کی ٹھنڈک اپنے سینے اور کندھوں کے درمیان محسوس کر رہاہوں۔ پھر آپؐ نے مجھ سے فرمایا اگر تم چاہو (تو اللہ کی طرف سے) تمہاری مدد کی جائے اور اگر تم چاہوتو ہمارے پاس افطار کر لو۔ میں نے ان دونوں باتوں میں سے افطار کو اختیار کر لیاہے۔ چنانچہ اسی دن آپؓ کو شہید کر دیا گیا۔





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں