حکومتی کورونا اگر 6ماہ رہ گیا تو ملک تباہ کردے گا،کورونا بیماری سے2،حکومتی کورونا سے 100فیصد خطرہ ہے، رانا ثناء اللہ کا دعویٰ


لاہور(این این آئی)پاکستان مسلم لیگ(ن) پنجاب کے صدر راناثنااللہ خان نے کہا ہے کہ حکومتی کورونا چھ ما ہ مزید رہ گیا تو ملک تباہ کر دے گا ، مسلم لیگ(ن) 26نومبر کو اوکاڑہ میں جلسہ کرے گی ، قوم فیصلہ کر لے کس کورونا سے لڑنا ہے ،کورونا بیماری سے 2فیصدجبکہ حکومتی کورونا سے 100فیصد خطرہ ہے ۔ انسداد منشیات کی خصوصی عدالت میںپیشی کے موقع پرمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثنااللہ نے کہا کہ حکومت جلسوں میں رکاوٹ ڈالنا چاہتی ہے، حکومتی وزرا ء جب بات کرتے ہیں تب یہ خود کورونا ہی لگتے ہیں ،حکومتی کورونا

کو ملک سے باہر نکال دینا چاہیے ،عوام حکومتی کورونا کے خلاف باہر نکلیں،کیا پی ڈی ایم حکومت سے اجازت لے کر تحریک چلائے گی ؟قوم فیصلہ کرلے کہ کس کورونا سے لڑنا ہے ۔ انہوںنے کہا کہ حکومتی کورونا اگر 6ماہ رہ گیا تو ملک تباہ کردے گا،حکومتی کورونا آٹا اور چینی کھا گیا ہے ۔ انہوںنے کہا کہ پشاور اور ملتان کے جلسے ضرور ہوںگے ، ہم 26نومبر کو اوکاڑہ میںبھی جلسہ کر رہے ہیں ،قوم کو اس وقت دوقسم کے کرونا کا سامنا ہے ایک کرونا سے 2 فیصد مرنے کا خدشہ ہے اوردوسرا کرونا حکومتی کرونا ہے اس میں 100 فیصد مرنے کا خطرہ ہے ،ہم حکومت کے خلاف تحریک چلا رہے اس لئے حکومت ہمیں کسی نہ کسی بہانے روکنا چاہتی ہے ۔ انہوںنے کہا کہ نواز شریف اپنے علاج کی وجہ سے لندن میں موجود ہیں اور علاج کے فوری بعد واپس آئیں گے ۔





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں