’’سندھ پولیس کے بڑے چھوٹے افسران کی دھڑا دھڑ چھٹی کی درخواستیں ‘‘ کس کیخلاف خاموشی سے کیا کام کیا جارہا ہے؟ حامد میر کا حیران کن انکشاف


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) سندھ کے محکمہ پولیس کے انسپکٹر جنرل (آئی جی) مشتاق مہر سمیت کئی افسران نے ایک ساتھ دو ماہ کی چھٹی پر جانے کا فیصلہ کرلیا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ گزشتہ روز کیپٹن (ر) محمد صفدر کی گرفتاری کے واقعے کے بعدپولیس فورس میں مایوسی پیدا ہوئی ہے۔اس حوالے سے سینئر صحافی حامد میر سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ ’’سندھ پولیس کے بڑے چھوٹے افسران دھڑا دھڑ چھٹی کی درخواستیں دے رہے ہیں ایسا لگتا ہے پولیس ایک خاموش ہڑتال کی طرف جا رہی ہے سب جانتے ہیں

ہڑتال کس کے خلاف کی جا رہی ہے اب کسی انکوائری کی ضرورت نہیں پھر بھی اس انکوائری کو کل کے دن میں مکمل کر کے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کی جائے۔ واضح رہے کہ کیپٹن صفدر کی گرفتاری اور رہائی معاملے پر آئی جی سندھ مشتاق مہر، ایڈیشنل آئی جی کراچی غلام نبی میمن، ایڈیشنل آئی جی اسپیشل برانچ عمران یعقوب منہاس اور متعدد ڈی آئی جیز شامل ہیں۔ ایڈیشنل آئی جی کراچی غلام نبی میمن نے بھی چھٹی کی درخواست دےدی ہے۔آئی جی سندھ، ایڈیشنل آئی جی کراچی، کراچی کے تینوں زونل ڈی آئی جی، ڈی آئی جی سی ٹی ڈی اور ڈی آئی جی میرپورخاص کا چھٹی پر جانے کا فیصلہ کرلیا گیا ۔ ذرائع کے مطابق سندھ پولیس کے افسران کی جانب سے کیپٹن صفدر کی گرفتاری کے معاملہ چھٹی پر جانے کا فیصلہ کیا گیا۔‎





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں