سینٹ، ضمنی انتخابات، استعفوں کا معاملہ مسلم لیگ (ن) ، پیپلز پارٹی میں دوریاں بڑھنے لگی،پیپلز پارٹی جو کررہی ہے وہ پی ڈی ایم کے طے شدہ نکات کا حصہ نہیں،حکومت سے بیک ڈور رابطوں کا انکشاف


اسلام آباد ( آن لائن ) سینٹ اور ضمنی انتخابات میں حصہ لینے اور استعفوں کے معاملے پر مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی میں دوریاں بڑھنے لگی ہیں اور (ن) لیگ نے باضابطہ طور پرمولانا فضل الرحمان سے پی ڈی ایم کا سربراہی اجلاس بلانے کا مطالبہ کردیا ہے ۔ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے قائد میاں نواز شریف کی ہدایت پر پی ڈی ایم کےسیکرٹری جنرل شاہد خاقان عباسی نے مولانا فضل الرحمان سے جمعرات اور جمعہ کی درمیانی رات جو طویل ملاقات کی اس میں موجودہ سیاسی صورتحال اورخاص کر پیپلز پارٹی کی موجودہ پالیسی اور

حکومت سے بیک ڈور رابطوں پر تبادلہ خیال کیاگیا ۔ شاہد خاقان عباسی کا موقف تھا کہ پی ڈی ایم کا سربراہی اجلاس جلد بلایا جانا چاہیے تاکہ اس صورتحال پرغور کیاجائے کیونکہ استعفوں کے معاملے پر پیپلز پارٹی جو لائن اختیارکرکے آگے بڑھ رہی ہے وہ پی ڈی ایم کی لائن نہیں ہے مولانا فضل الرحمان نے واضح کیاکہ وہ آئندہ چند روز میں پی ڈی ایم کا سربراہی اجلاس بلائینگے اوراس میں کھل کرباتیں ہونگی اور پیپلز پارٹی سے ان کا نقطہ نظر معلوم کیاجائیگا جبکہ حکومت کے ساتھ بیک ڈور رابطوں پر بھی شاہد خاقان عباسی نے شدید تحفظات کا اظہار کیا ہے اور کہا کہ پیپلز پارٹی جو کررہی ہے وہ پی ڈی ایم کے طے شدہ نکات کا حصہ نہیں ہے .





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں