سینٹ الیکشن سے قبل حکومت کو بڑا دھچکا تحریک انصاف کے 2اراکین اسمبلی کا پیپلز پارٹی میں شامل ہونے کا فیصلہ، ٹکٹ بھی مانگ لئے


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، این این آئی)سینٹ انتخابات سے قبل حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف کو بڑا دھچکا ۔نجی ٹی وی کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے کے 2 اہم اراکین سندھ اسمبلی نے پارٹی چھوڑنے کا فیصلہ کر لیاہے۔اسلم ابڑو اور شہریار خان نےپاکستان پیپلز پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ارکان اسمبلی نے مطالبہ کیا ہے کہضمنی انتخابات کے لیے پیپلزپارٹی کا ٹکٹ دیں۔پیپلز پارٹی نے مشروط شرط پارٹی قیادت کے سامنے رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔دوسری جانب سپریم کورٹ نے سینیٹ الیکشن اوپن بیلیٹ سے کرانے کا صدارتی ریفرنس سماعت کے لئے مقرر کر دیا،چیف جسٹس

آف پاکستان گلزار احمد کی سربراہی میں 5 رکنی لارجر بینچ 4 جنوری کو دوپہر ایک بجے ریفرنس پر سماعت کرے گا۔سپریم کورٹ کا پانچ رکنی لارجر بینچ سینیٹ انتخابات سے متعلق صدارتی ریفرنس پر سماعت کرے گا۔صدارتی ریفرنس پر سماعت کرنے والا بینچ چیف جسٹس گلزار احمد ، جسٹس مشیر عالم، جسٹس عمر عطا بندیال، جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس یحییٰ آفریدی پر مشتمل ہو گا۔خیال رہے کہ حکومت نے سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ یا شو آف ہینڈز کے ذریعے کرانے کے لئے سپریم کورٹ سے رائے طلب کی ہے۔سپریم کورٹ نے صدارتی ریفرنس پر اٹارنی جنرل کو نوٹسجاری کر دیا ، ریفرنس پرابتدائی سماعت چار جنوری کو دوپہر ایک بجے ہوگی۔چند روز قبل وفاقی حکومت نے سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ یا شو آف ہینڈ کے ذریعے کرانے کے سپریم کورٹ میں صدارتی ریفرنس دائر کیا تھا۔صدر مملکت ڈاکٹرعارف علوی کی جانب سے سینیٹ انتخاباتاوپن بیلٹ یا شو آف ہینڈ کے ذریعے کرانے سے متعلق ریفرنس پر دستخط کرنے کے بعد حکومت نے عدالت سے رجوع کیا اور رائی مانگی تھی۔سپریم کورٹ میں دائر صدارتی ریفرنس میں مؤقف اپنایا گیا کہ سینیٹ انتخابات آئین کے تحت نہیں کرائے جاتے۔سینیٹ کا انتخاب الیکشن ایکٹ 2017 کےتحت کرایا جاتا ہے۔ سینٹ کا الیکشن اوپن بیلٹ کے تحت ہو سکتا ہے۔حکومت نے مؤقف اپنایا کہ اوپن بیلٹ سے سینیٹ الیکشن میں شفافیت آ ئے گی۔ریفرنس میں کہا گیا تھا کہ خفیہ ووٹنگ کی وجہ سے سینیٹ الیکشن کے بعد شفافیت پر سوال اٹھائے جاتے ہیں۔صدرمملکت نے ریفرنس سپریم کورٹ بھجوانے کی منظوری دی تھی۔ انہوں نے آئین آرٹیکل 186 کے تحت سپریم کورٹ ریفرنس بھجوانے کی وزیرِاعظم کی تجویز منظور کی۔





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں