شہزاد اکبر کے خلاف ججز کی جاسوسی کا کیس ، ججز کے خلاف سازش میں وزیراعظم کا بھی کردار ، صدر عارف علوی متنازعہ قرار،جسٹس قاضی فائز عیسی کے فیصلے پر پیپلز پارٹی کا ردعمل


اسلام آباد (این این آئی)جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیس کا تحریری فیصلہ، پاکستان پیپلزپارٹی نے صدر مملکت عارف علوی کو متنازعہ قرار دے دیا۔ اپنے بیان میں نفیسہ شاہ نے کہاکہ سپریم کورٹ کا تفصیلی فیصلہ صدر عارف علوی کے کردار پر بہت بڑا سوالیہ نشان ہے، عارف علوی
نے ڈکٹیٹشن لیتے ہوئے اپنے صوابدیدی اختیارات سے تجاوز کیا۔ انہوںنے کہاکہ فیصلے کے مطابق صدر مملکت کے مستقبل کے فیصلے اور ممکنہ ریفرنس مشکوک قرار پائے جائیں گے، سپریم کورٹ کے تفصیلی فیصلے کے بعد عارف علوی صدر کے عہدے پر فائز رہنے کا جواز کھو بیٹھے ہیں، تفصیلی فیصلے سے

حکومت کی معزز جج کو متنازعہ بنانے کی سازش بے نقاب ہوگئی ہے، ایک مرتبہ پھر ایک ادارے نے انصاف کے سلیکٹڈ سسٹم پر بات کی ہے، پوری قوم نے دیکھا کہ کس انداز سے ایک معزز جج پر دباو ڈالنے کے لئے انکی اہلیہ کو ایف بی آر کے چکر کاٹنے پر مجبور کیا گیا۔ نفیسہ شاہ نے کہاکہ شہزاد اکبر کا ایسیٹ رکوری یونٹ غیر قانونی ثابت ہوا ہے، شہزاد اکبر نے غیرقانونی فورم کو استعمال کر کے ججز کی جاسوسی کی۔ انہوںنے کہاکہ کیا شہزاد اکبر کے خلاف ججز کی جاسوسی کا کیس نہیں بننا چاہئے، ججز کے خلاف سازش میں وزیراعظم کا بھی کردار نظر آرہا ہے، وزیراعظم کو بھی گھر جانا ہو گا۔ انہوںنے کہاکہ معزز ججز کو متنازعہ بنانے کی کوشش میں ملوث تمام افراد کے خلاف کارروائی کی جائے۔





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں