ناشتے میں ڈبل روٹی کھانے کے خوفناک نقصانات


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )صبح کے وقت نا شتے کی میز پر اگر ڈبل روٹی نہ ہو تو ناشتہ مکمل نہیں ہوتا۔لیکن ہم کبھی یہ خیال نہیں کرتے کہ بظاہر نرم و نازک سفید رنگ اور بھورے کناروں والی اس روٹی کے اجزائے ترکیبی کیا ہیں۔ کیا یہ صحت کیلئے بھی اتنی ہی اچھی ہے جتنی دیکھنے میں لگتی ہے۔ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ اگر آپ کو سفید روٹی میں استعمال کیے جانے والے اجزائےترکیبی کے بارے میں بتا دیا جائے تو لاز ما ًآ پ اسے پہلی فرصت میں ترک کر دیں گے۔آٹے اور روٹی کی غذائیت پر

رچ فوڈ پوئر فوڈنامی کتاب تحریر کرنے والے جیسن اور میراکیلٹن کا کہنا ہے کہ وائٹ بریڈ(سفید ڈبل روٹی )میں اذوڈیکاربونمڈنامی کیمیکل استعمال کیا جاتا ہے جو کہ دمہ کی بیماری کو جنم دینے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔لکھار یوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ یہ کیمیکل ڈبل روٹی کی تیاری کے دوران اس کا رنگ سفید اور صاف کرنے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ اذوڈیکاربونمڈنامی کیمیکل پاڈر کی شکل میں ، سرخ، نارنجی اور پیلے رنگ میں دستیا ب ہوتا ہے، اسے (ای927) نمبر کے طور پر جانا جاتا ہے۔علاوہ ازیں انکا یہ بھی کہناہے کہ سلفر ڈائی آکسائیڈ کو اذوڈیکاربونمڈکے نعم بدل کے طور پر استعمال کیا جا سکتا ہے۔وہ ممالک جہاں (ای927) کا استعمال ممنوع قرار دیا جا چکا ہے وہاں اس کی جگہ سلفر ڈائی آکسائیڈ ہی استعمال کیا جاتا ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ اذوڈیکاربونمڈاور سلفر ڈائی آکسائیڈ دونوں کا کھانے میں استعمال انسانی صحت کیلئے نا صرف مضر ہے بلکہ اس کے مستقل استعمال سے دمے کی بیماری کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں