پاکستان کی پہلی خواجہ سرا ماڈل رمل علی بھی تشدد کا نشانہ بن گئی ملزم نے خواجہ سرا کے سر کے بال اور بھنویں کاٹ دیں


لاہور(این این آئی) پاکستان کی پہلی ٹرانس جینڈر ماڈل رمل نے خود پر ہونے والے تشدد کی ویڈیو سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرتے ہوئے حکومت اور پولیس افسران سے تحفظ دینے کی اپیل کی ہے، ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ملزم نے ماڈل کے سر کے بال کاٹ دئیےاو ربھنویں بھی مونڈھ دیں۔ ٹرانس جینڈر ماڈل رمل علی نے اپنے اکاؤنٹ سے جاری کی گئی ویڈیو میں بتایا کہ اٹک کا رہائشی با اثر جہانزیب خان نامی شخص گزشتہ دو سال سے اسے شوبز میں کام کرنے سے روک رہا ہے اور اسے تشدد کا نشانہ بناتا ہے۔

ویڈیو میں عصمت دری کا بھی الزام لگایاگیا ہے۔ اب میرے انکار کرنے پر سر کے بال کاٹ دئیے گئے اور بھنویں مونڈھ دیں۔ میں نے اس حوالے سے پولیس سے بھی رابطہ کیا لیکن مجھے انصاف نہیں ملا۔ انہوں نے ملزم کی جانب سے جسم پرتشدد کے نشانات دکھاتے ہوئے حکومت اور پولیس افسران سے اپیل کی ہے کہ مجھے جان کا خطرہ ہے اس لئے مجھے تحفظ دیا جائے۔‎‎





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں