پٹرول کی اصل قیمت 49 روپے ہے، باقی 55 روپے ٹیکس، لیوی اور ڈیوٹیز ہیں، تہلکہ خیز انکشافات


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر اعظم کی ہدایت پر گزشتہ روز وزار ت خزانہ نے 15 روز کے لئے پیٹرول کی قیمت برقراررکھنے کا فیصلہ کیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق آئندہ 15 روز کے لئے پٹرول کی قیمتیں برقرار رہیں گی، ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں کمی کر دی گئی،ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 2.40 روپے فی لٹر کمی کر دی گئی،اوگرا نے پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت میں دو اورتین روپے فی لیٹر کمی کی سفارش کی تھی۔ایک نجی ٹی وی ڈان نیوز نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ پٹرول کی اصل قیمت 49

روپے ہے، باقی 55 روپے ٹیکس، لیوی اور ڈیوٹیز ہیں، رپورٹ کے مطابق حکومت کی طرف سے پٹرول کی فی لیٹر قیمت پر 55.04 روپے،ہائی سپیڈ ڈیزل کے فی لیٹر پر 58.29 روپے، مٹی کے تیل کی فی لیٹر پر 24 روپے 73 پیسے، لائٹ ڈیزل پر فی لیٹر 20.56 روپے لیوی، ٹیکس اور ڈیوٹیز لاگو کی گئی ہیں۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پٹرول کی فی لیٹرقیمت خرید 48.93 بنتی ہے اور اس وقت پٹرول کی قیمت فروخت 103 روپے 97 پیسے ہے۔ ڈیزل کی قیمت خرید 45 روپے 77 پیسے بنتی ہے جبکہ قیمت فروخت 104 روپے 6 پیسے رکھی گئی ہے،مٹی کے تیل کی قیمت خرید 40 روپے 56 پیسے ہے اور قیمت فروخت 65 روپے 29 پیسے رکھی گئی ہے،لائٹ ڈیزل کی قیمت خرید 42.30 روپے جبکہ فروخت 62.86 روپے رکھی گئی ہے۔رپورٹ کے مطابق ہائی سپیڈ ڈیزل کی فی لیٹر قیمت پر لیوی بڑھا کر 30 روپے کر دی گئی ہے،اس کے علاوہ ہائی سپیڈ ڈیزل پر 15.12 روپے سیلز ٹیکس بھی الگ سے نافذ ہے،اس پر فی لیٹر پر تین روپے 12 پیسے ڈیلر کمیشن بھی لاگو ہے، دستاویزات میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ہائی سپیڈ ڈیزل پر او ایم سی مارجن 2.81 روپے اور ان لینڈ فریٹ مارجن 96 پیسے وصول کیا جارہاہے۔ڈیزل کی طرح پٹرول پربھی لیوی لاگو ہے اس فی لیٹر قیمت پر 27.32 روپے لیوی ہے اس کے علاوہ 15.11 روپے سیلز ٹیکس الگ سے وصول کیا جا رہا ہے جبکہ پٹرول کے فی لیٹر قیمت پر تین روپے 70 پیسے ڈیلر کمیشن بھی وصول کیا جارہاہے، اسکے علاوہ پٹرول پر او ایم سی مارجن کی مد میں 2 روپے 81 پیسے وصول کئے جا رہے ہیں اورفی لیٹر پر ان لینڈ فریٹ مارجن 3.53 روپے عائد ہے۔ اس کے علاوہ کسٹمز ڈیوٹی کی مد میں 2.57 روپے وصول کئے جا رہے ہیں۔





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں