پی ڈی ایم کا بڑا فیصلہ، کراچی جلسے میں کیا دکھانے جارہی ہے؟ تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آگیا


اسلام آباد،پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک، آن لائن)اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد پی ڈی ایم کے زیر اہتمام آج کراچی میں سیاسی قوت کا مظاہر کیا جائیگا، اسی تناظر میں جے یو آئی(ف )کے رہنما اکرم خان درانی کے نام سے موجود سوشل میڈیا اکائونٹ پر بتایا گیا ہے کہ ”پی ڈی ایم کابہترین فیصلہ، آج کراچی جلسے میں عمران خان کے پاک فوج کے خلاف دیے گئے تمام سابقہ بیانات اور الزامات بڑی سکرین پر دکھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے”۔دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ (ن) خیبرپختونخوا کے صدر انجینئر امیر مقام نے کہا ہے کہ نئے پاکستان کو دیکھ کر لوگ توبہ

توبہ کررہے ہیں ، نیا عمران نیازی کوئی نیا چاند نہ چڑھا دے ،سلیکٹڈ پی ڈی ایم جلسے کی کرسیاں اور بندے نہ گنیں بلکہ اپنے دن گنیں اور اپنا بوریا بستر باندھیں ،دکاندار، مزدور ،تاجر، کسان، خواتین، طالب علم، ڈاکٹر ہر طبقہ ‘گونیازی گو’ کا نعرہ لگارہا ہے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے پشاور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ عمران نیازی ڈی چوک پر موجود لیڈی ہیلتھ ورکرز کو چہرہ نہیں دکھا سکتا، اپوزیشن کو کون سا نیا چہرہ دکھائے گا،بزدل نیازی قومی اسمبلی سے اپوزیشن کے چند ارکان سے ڈر کر بھاگ گیا، پوری قوم کا مقابلہ کیا کرے گا؟ اتنی مہنگائی کے بعد عمران نیازی قوم کو چہرہ دکھانے کے ویسے ہی قابل نہیں رہا۔بی آرٹی کے نام پر کرپشن اور نااہلی کی جو اندھیر نگری کی ہے،عمران نیازی کو منہ چھپا کر گھر چلے جانا چاہئے ،انہوں نے کہا کہ عمران نیازی کی گزشتہ روز کی تقریر پنجابی فلموں کے ولن کی تقریر تھی ،نوازشریف اور مریم نوازشریف کی تقریروں نے عمران نیازی کاوہی حال کیا جو ہیرو بدمعاش ولن کا کرتا ہے ،عمران نیازی یوٹرن، عہد شکنی، بے وفائی ، جھوٹ اور کرپشن کا چہرہ ہے ،عمران نیازی نے اپنے وفادار، نظریاتی اور مخلص ساتھیوں کو بھلا دیا، اپنے نظریے کو دفن کردیا، اب کون سا نیا چہرہ دکھائے گا؟عمران نیازی کے نئے پاکستانکو دیکھ کر لوگ توبہ توبہ کررہے ہیں ، نیا عمران نیازی کوئی نیا چاند نہ چڑھا دے ،پہلے کہا تھا کہ تبدیلی لارہا ہوں تو شادی پر شادی کرلی تھی، اب نجانے قوم کو کیا دیکھنے کو ملنے والا ہے ، سلیکٹڈ انکل آپ کا واسطہ غیرسیاسی بچوں سے نہیں پڑا ،مریم نواز شریف اور بلاول بھٹو کیتقریروں سے ”سلیکٹڈ انکل” کا ذہنی توازن مکمل خراب ہوگیا ہے،پی ڈی ایم جلسے کی کرسیاں اور بندے نہ گنیں، سلیکٹڈ اپنے دن گنیں اور اپنا بوریا بستر باندھیں ،عمران نیازی عوام سے نہ لڑیں، وہ عوام میں اپنا مقدمہ ہار چکے ہیں،دکاندار، مزدور،تاجر، کسان، خواتین، طالب علم، ڈاکٹر ہر طبقہ ‘گونیازی گو’ کا نعرہ لگارہا ہے۔





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں