کوئٹہ جلسہ، نوازشریف نے پاک فوج کے افسران اور جوانوں کیلئے اہم پیغام جاری کردیا


اسلام آباد،کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک)سابق وزیراعظم نوازشریف نے کوئٹہ میںپی ڈی ایم جلسے سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کیا ، اس موقع پرانہوں نے پاک فوج کے جوانوں اور افسران کے نام ایک پیغام جاری کیا ،اپنے خطاب میں پاک فوج کے افسران اور جوانوں کے نام اپنےپیغام میں کہا کہ یہ آپ کا اپنا ملک ہے اور آپ اس کے لیے جان دینے سے بھی گریز نہیں کرتے، آپ نے اس کی حفاظت کا حلف اٹھایا ہے ، اتنا ہی اہم اس کے آئین کی تابعداری ہے ، آئین شکنی ہوتو ظلم کا دور شروع ہوجاتاہے، جب آپ کسی فرد

واحد یا مفاد پرسٹ ٹولے کے ساتھ ملتے ہیں تو اپنے حلف کی پاسداری نہیں کررہے ہوتے، ملک کو بچایئے۔اس سے پہلے پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ کے نائب صدر پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما راجہ پرویز اشر ف نے کہا ہے کہ دو سال میں جھوٹی حکومت کا پردہ فاش ہوچکا ہے ،عوام نے ان کو مسترد کر دیا ہے ، اب یہ نہیں ہوگا کوئی کرکٹ کھیلتے کھیلتے وزیر اعظم بن جائے ۔ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے انہوںنے کہاکہ حکمرانوں نے عوام سے جھوٹ بولا، الیکشن میں جھوٹے وعدے کیے۔انہوں نے کہا کہ عوام نے انہیں مسترد کردیا ہے، وقت آگیا ہے کہ حکمرانی وہ کرے جسے عوام منتخب کریں، اب یہ نہیں ہو گا کہ کوئی کرکٹ کھیلتے کھیلتے وزیرِ اعظم بن جائے۔راجہ پرویز اشرف نے کہاکہ حکومت کے وزیر کہتے ہیں کہ جلسوں سے حکومت نہیں جاتی، تو پھر آپ کی ٹانگیں کیوں کانپ رہی ہیں؟سابق وزیر اعظم نے کہا کہ یہ لوگ جس طریقے سے آئے تھے وہ طریقہ ہی غلط تھا، اب پاکستان کی ساری جماعتیں اٹھ کھڑی ہوئی ہیں۔انہوںنے عمران خان پر تنقید کرتے ہوئےکہاکہ آپ نے کہا کہ دیگر سیاست دان کرپٹ اور ہم ایماندار ہیں، آپ نے کہا دیگر سیاست دان کرپٹ اور ہم ایماندار ہیں، جھوٹ بولنے والے کیلئے دنیا اور آخرت میں سخت سزا ہے، آج بچہ بچہ جانتا ہے یہ نااہل حکومت ہے،وقت آگیا ہے پاکستان کی حکمرانی وہ کرے جو عوام کےووٹ سے آئے گا۔جے یو پی کے اویس نورانی نے کہا کہ حکومت احتساب کے نام پر لوگوں کی تذلیل کرنا چاہتی ہے، ایسے احتساب کے عمل کو جوتے کی نوک پر رکھتے ہیں، ملک کا آئین توڑنے والوں کا بھی احتساب ہوناچاہیے، آنے والا وقت پاکستان کے عوام کا ہے۔مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ موجودہ حکومت عوام کی منتخب کردہ نہیں بلکہ مسلط کی گئی ہے، حکومت نے دوسال میں ثابت کردیا کہ وہ عوام کی مشکلات حل نہیں کرسکتیں، وہ احتساب کی گردان کرتے ہیں اور احتساب نہیں انتقام لیتے ہیں، یہ دوائیں، پٹرول اور آٹا غائب کرکے مہنگا کرنے والا نیا پاکستان ہے۔اس غیر آئینی اور غیر اخلاقی حکومت سے چھٹکارا حاصل کریں گے۔قومی وطن پارٹی کے آفتاب احمد خان شیرپاؤ نے کہا کہ مہنگائی ملک کا سب سے بڑا مسئلہ بن چکا ہے، غریب آدمی کیلئے 2 وقت کی روٹی کمانا مشکل ہے، ادویات کی قیمتوں میں 100 فیصد اضافہ ہوگیا، موجودہ دورحکومت میں عوامی مشکلات اور مسائل دور نہیں کیے گئے، آئندہ انتخابات کے نتیجے میں عوام کی خواہش پر حکومت آئے گی۔آفتاب شیر پائو نے کہاکہ حکومت کی نااہلی نے ملک کو نقصان پہنچایا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت، اپوزیشن کے جلسوں سے خوفزدہ ہے اور گوجرانوالہ جلسے کےبعد انہوں نے مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں کے خلاف غداری کے مقدمات درج کروائے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ یہ (حکومت) کراچی میں اتنی خوفزدہ ہوگئی کہ مرکز نے صوبے پر حملے کردیا اور دستخط کیلئے آئی جی پولیس کو اغوا کرلیا۔انہوں نے کہا کہ اس نااہل حکومت نے خود کوالگ تھلگ کرلیا ہے اور اس کی ہرپالیسی ناکام ہوگئی ہے اور مہنگائی کی وجہ سے ہر شخص کی زندگی مشکل ہوگئی ہے۔ جلسے سے عوامی نیشنل پارٹی کے نائب صدر امیر حیدر خان ہوتی نے مسلم لیگ (ن) کے رہنما محمد صفدر کے ساتھ کراچی اور رکن قومی اسمبلی محسن داوڑکی کوئٹہ آمد پر پیش آئے واقعات کی مذمت کی۔انہوں نے بلوچستان کا عمران خان کیلئے پیغام ہے کہ آپ نااہل اور ناکام ہیں۔عوامی نیشنل پارٹی کے امیر حیدر ہوتی نے کہا کہ پاکستان کی اپوزیشن جماعتیں ایک ہوگئی ہیں، سب کو مل کر وفاق سے صوبوں کا حق لیناہے، بلوچستان کو گیس اورخیبرپختونخواکو بجلی سے محروم رکھا جار ہاہے، بلوچوں اور پختونوں کو مل کر بلوچستان کے حقوق حاصل کرنا ہیں، گوادر پر سب سے پہلا حق بلوچستان کا ہوناچاہیے، پنجاب اور پورے پاکستان سے جو آواز اٹھ رہی ہے اس کا بھی مقدمہ لڑنا ہے۔

موضوعات:

صرف تین ہزار روپے میں

دنیا میں جہاں بھی اردو پڑھی جاتی ہے وہاں لوگ مختار مسعود کو جانتے ہیں‘ مختار مسعود بیورو کریٹ تھے‘ ملک کے اعلیٰ ترین عہدوں پر رہے‘ لاہور کا مینار پاکستان ان کی نگرانی میں بنا‘ یہ اس وقت لاہور کے ڈپٹی کمشنر تھے‘ چارکتابیںلکھیںاور کمال کر دیا‘ یہ کتابیں صرف کتابیں نہیں ہیں‘ یہ تاریخ‘ جغرافیہ اور پاکستان کے ….مزید پڑھئے‎

دنیا میں جہاں بھی اردو پڑھی جاتی ہے وہاں لوگ مختار مسعود کو جانتے ہیں‘ مختار مسعود بیورو کریٹ تھے‘ ملک کے اعلیٰ ترین عہدوں پر رہے‘ لاہور کا مینار پاکستان ان کی نگرانی میں بنا‘ یہ اس وقت لاہور کے ڈپٹی کمشنر تھے‘ چارکتابیںلکھیںاور کمال کر دیا‘ یہ کتابیں صرف کتابیں نہیں ہیں‘ یہ تاریخ‘ جغرافیہ اور پاکستان کے ….مزید پڑھئے‎





Source link

اپنا تبصرہ بھیجیں